مرے لئے.....!


مرے لئے.....!

جب عکس عکس گنوا دیا
کبھی رُو بُرو تھی مرے لئے

جب نقش نقش بجھا دیا
کبھی چار سُو تھی مری لئے

جو حدِ ہَوا سے بھی دُور ہے
کبھی کُو بکُو تھی مری لئے

جو تَپش ہے مَوجِ سراب کی
کبھی آبجُو تھی مری لئے

جِسے "آپ" لکھتا ہُوں خط میں اَب
کبھی صرف "تُو" تھی مری لئے

(محسن نقوی)
(رختِ شب)

2 Response to "مرے لئے.....! "

علی said... Best Blogger Tips[کمنٹ کا جواب دیں]Best Blogger Templates

آخری شعر تو ظلم ہے

محمد بلال اعظم said... Best Blogger Tips[کمنٹ کا جواب دیں]Best Blogger Templates

شکریہ علی صاحب

Post a comment

اردو میں تبصرہ پوسٹ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کر دیں۔


شئیر کیجیے

Ads 468x60px